Saturday, 7 November 2020

لاٹری کی ایک شکل کا حکم

لاٹری کی ایک شکل کا حکم

-------------------------------
--------------------------------

السلام علیکم 

ایک مسئلہ سمجھنا تھا. وہ یہ کہ دوکان والے کچھ پرچی رکھتے ہیں جسے کھولا جاتا ہے اس کے اندر کچھ نمبر لکھا رہتا ہے. دوسرے کاغذ پر کچھ سامان چپکا رہتا ہے مثلا ٹارچ گھڑی وغیرہ. اگر پرچی اور گھڑی کے سامنے کا نمبرایک رہا تو اسے مل جائے گی. اور کبھی کچھ نہیں نکلتا اسے ٹاٹا بولتے ہیں. ایسا سامان بیچنا کیسا ہے؟

———————
الجواب وباللہ التوفیق:

یہ قمار (جوا) کی شکل ہے. احتمالی انعام کے لالچ میں جانے کتنے لوگ قیمۃً یہ پرچی خریدیں گے 

کتنوں کو کچھ نہیں ملے گا. اور اس کی خریدی گئی پرچی بیکار جائے گی. قمار و میسِر (اردو میں: جوا) اسی کو کہتے ہیں کہ کسی غیریقینی واقعے کی بنیاد پر کوئی رقم اس طرح داؤ پر لگائی جائے کہ یا تو رقم لگانے والااپنی لگائی ہوئی رقم سے ہاتھ دھو بیٹھے یا اُسے اتنی ہی یا اس سے زیادہ ر قم کسی معاوضہ کے بغیر مل جائے۔ قمار شیطانی عمل اور ناجائز وحرام ہے:

يَا أَيُّهَا الَّذِينَ آمَنُواْ إِنَّمَا الْخَمْرُ وَالْمَيْسِرُ وَالْأَنصَابُ وَالْأَزْلاَمُ رِجْسٌ مِّنْ عَمَلِ الشَّيْطَانِ فَاجْتَنِبُوهُ لَعَلَّكُمْ تُفْلِحُونَ (المائدة :90)

واللہ اعلم بالصواب

شکیل منصور القاسمی

https://saagartimes.blogspot.com/2020/11/blog-post_68.html



No comments:

Post a comment